Teri Chahatain By Ayman Khan

پر اذیت ہے ہمارے واقعات زندگی
جن میں سرفہرست ہیں تیرے رنجشیں
ہر ایک شوق ہے اب اختتام پذیر اپنا
مگر اب بھی پسند ہیں تیری رغبتیں
حقیقت کے پردے میں ہےتیری ذات نفی
عشق میں ذات کی حامی تیری قربتیں
ہیں نشاں اور بے نشاں بے وقت کہ
رکھے ہوئے ہیں مگر زندہ تیری عداوتیں
سرد، گرم، بہار اور پت جھڑ چار موسم
مگرہجر کےہرموسم میں زرخیز تیری چاہتیں

IG: https://instagram.com/jaan_e_maann?igshid=YmMyMTA2M2Y=

1 thought on “Teri Chahatain By Ayman Khan”

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *